ہائے ہائے – میرزا اسد الله بیگ غالب

ہائے ہائے کلکتہ کا جو ذکر کیا تُو نے ہم نشیں! اِک تِیر میرے سینے میں مارا کہ ہائے ہائے وه سبزه زار ہائے مُطرّا…

Read More..

چہار شنبہ آخرَ ماهِ صفر – میرزا اسد الله بیگ غالب

چہار شنبہ آخرَ ماهِ صفر ہے چار شنبہ آخرِ ماهِ صَفَر چلو رکھ دیں چمن میں بھر کے مئے مُشک بُو کی ناند جو آئے،…

Read More..

گئے وه دن کہ نا دانستہ غیروں کی وفا داری – میرزا اسد الله بیگ غالب

گئے وه دن کہ نا دانستہ غیروں کی وفا داری گئے وه دن کہ نا دانستہ غیروں کی وفا داری کیا کرتے تھے تم تقریر،…

Read More..

خط منظوم بنام علائی – میرزا اسد الله بیگ غالب

خط منظوم بنام علائی خوشی تو ہے آنے کی برسات کے پئیں بادہ ناب اور آم کھائیں سر آغازِ موسم میں اندھے ہیں ہم کہ…

Read More..

گو ایک بادشاه کے سب خانہ زاد ہیں – میرزا اسد الله بیگ غالب

گو ایک بادشاه کے سب خانہ زاد ہیں گو ایک بادشاه کے سب خانہ زاد ہیں درباردار لوگ بہم آشنا نہیں کانوں پہ ہاتھ دھرتے…

Read More..

اے شہنشاهِ فلک منظرِ بے مثل و نظیر – میرزا اسد الله بیگ غالب

اے شہنشاهِ فلک منظرِ بے مثل و نظیر اے شہنشاهِ فلک منظرِ بے مثل و نظیر اے جہاندارِ کرم شیوہ بے شبہ و عدیل پاوں…

Read More..

ہوئی جب میرزا جعفر کی شادی – میرزا اسد الله بیگ غالب

ہوئی جب میرزا جعفر کی شادی ہوئی جب میرزا جعفر کی شادی ہوا بزمِ طرب میں رقصِ ناہید کہا غالبؔ سے: ” تاریخ اس کی…

Read More..

بیسنی روٹی – میرزا اسد الله بیگ غالب

بیسنی روٹی نہ پُوچھ اِس کی حقیقت، حُضُورِ والا نے مجھے جو بھیجی ہے بیسن کی رَوغَنی روٹی نہ کھاتے گیہوں، نکلتے نہ خُلد سے…

Read More..

سیہ گلیم ہوں لازم ہے میرا نام نہ لے – میرزا اسد الله بیگ غالب

سیہ گلیم ہوں لازم ہے میرا نام نہ لے سیہ گلیم ہوں لازم ہے میرا نام نہ لے جہاں میں جو کوئی فتح و ظفر…

Read More..

اِس کتابِ طرب نصاب نے جب – میرزا اسد الله بیگ غالب

اِس کتابِ طرب نصاب نے جب اِس کتابِ طرب نصاب نے جب آب و تاب انطباع کی پائی فکرِ تاریخِ سال میں، مجھ کو ایک…

Read More..

قطعہ تاریخ – میرزا اسد الله بیگ غالب

قطعہ تاریخ خُجستہ انجمن طُوئے میرزا جعفر کہ جس کے دیکھے سے سب کا ہوا ہے جی محظوظ ہوئی ہے ایسے ہی فرخنده سال میں…

Read More..

اے جہاں آفریں خدائے کریم – میرزا اسد الله بیگ غالب

اے جہاں آفریں خدائے کریم اے جہاں آفریں خدائے کریم ضائعِ ہفت چرخ، ہفت اقلیم نام میکلوڈ جن کا ہے مشہور یہ ہمیشہ بصد نشاط…

Read More..

طائرِ دل – میرزا اسد الله بیگ غالب

طائرِ دل اٹھا اک دن بگولا سا جو کچھ میں جوشِ وحشت میں پھرا آسیمہ سر، گھبراگیا تھا جی بیاباں سے نظر آیا مجھے اک…

Read More..

ایک اہلِ درد نے سنسان جو دیکھا قفس – میرزا اسد الله بیگ غالب

ایک اہلِ درد نے سنسان جو دیکھا قفس ایک اہلِ درد نے سنسان جو دیکھا قفس یوں کہا آتی نہیں اب کیوں صدائے عندلیب؟ بال…

Read More..

گوڑگانویں کی ہے جتنی رعیّت، وه یک قلم – میرزا اسد الله بیگ غالب

گوڑگانویں کی ہے جتنی رعیّت، وه یک قلم گوڑگانویں کی ہے جتنی رعیّت، وه یک قلم عاشق ہے اپنے حاکمِ عادل کے نام کی سو…

Read More..

سہل تھا مُسہل ولے یہ سخت مُشکل آپڑی – میرزا اسد الله بیگ غالب

سہل تھا مُسہل ولے یہ سخت مُشکل آپڑی سہل تھا مُسہل ولے یہ سخت مُشکل آپڑی مجھ پہ کیا گُزرے گی، اتنے روز حاضر بِن…

Read More..

روزه – میرزا اسد الله بیگ غالب

روزه افطارِ صوم کی جسے کچھ دستگاه ہو اُس شخص کو ضرور ہے روزه رکھا کرے جس پاس روزه کھول کے کھانے کو کچھ نہ…

Read More..

در مدح ڈلی – میرزا اسد الله بیگ غالب

در مدح ڈلی ہے جو صاحب کے کفِ دست پہ یہ چکنی ڈلی زیب دیتا ہے اسے جس قدر اچھّا کہیے خامہ انگشت بہ دنداں…

Read More..