والئ الور کی سالگره پر – میرزا اسد الله بیگ غالب

والئ الور کی سالگره پر گئی ہیں سال کے رشتے میں بیس بار گره ابھی حساب میں باقی ہیں سو ہزار گره گره کی ہے…

Read More..

نوّاب یوسف علی خاں – میرزا اسد الله بیگ غالب

نوّاب یوسف علی خاں عیدِ شوّال و ماهِ فروردیں شب و روز افتخارِ لیل و نہار مہ و سال اشرفِ شہور و سِ نیں گرچہ…

Read More..

مدح نصرت الملک بہادر – میرزا اسد الله بیگ غالب

مدح نصرت الملک بہادر نُصرت الملک بہادُر مجھے بتلا کہ مجھے تجھ سے جو اتنی اِرادت ہے تو کس بات سے ہے؟ گرچہ تُو وه…

Read More..

میکلوڈ صاحب کی خدمت میں – میرزا اسد الله بیگ غالب

میکلوڈ صاحب کی خدمت میں کرتا ہے چرخ روز بصد گونہ احترام فرماں روائے کشورِ پنجاب کو سلام حق گو و حق پرست و حق…

Read More..

منقبت – میرزا اسد الله بیگ غالب

منقبت حضرت علی کے لئے دہر جُز جلوہ یکتائِ معشوق نہیں ہم کہاں ہوتے اگر حسن نہ ہوتا خود بیں بے دلی ہائے تماشا کہ…

Read More..

منقبتِ حیدری – میرزا اسد الله بیگ غالب

منقبتِ حیدری سازِ یک ذرّه نہیں فیضِ چمن سے بیکار سایۂ لالۂ بےداغ سویدائے بہار مستئ بادِ صبا سے ہے بہ عرضِ سبزه ریزہ شیشۂ…

Read More..

گزارش مصنّف بحضورِ شاه – میرزا اسد الله بیگ غالب

گزارش مصنّف بحضورِ شاه اَے شَہنشاهِ آسماں اَورنگ اَے جہاندارِ آفتاب آثار تھا میں اِک بے نَوَائے گوشہ نشیں تھا میں اِک دردمندِ سینہ فگار…

Read More..

در مدحِ شاه – میرزا اسد الله بیگ غالب

در مدحِ شاه اے شاهِ جہاں گیر جہاں بخشِ جہاں دار ہے غیب سے ہر دم تجھے صد گُونہ بشارت جو عُقدہ دُشوار کہ کوشش…

Read More..

مدحِ شاه اول – میرزا اسد الله بیگ غالب

مدحِ شاه صبح دم دروازہ خاور کھلا مہرِ عالمتاب کا منظر کھلا خسروِ انجم کے آیا صرف میں شب کو تھا گنجینۂ گوہر کھلا وه…

Read More..

ایلین براون – میرزا اسد الله بیگ غالب

ایلین براون ملاذِ کشور و لشکر، پناهِ شہر و سپاه جنابِ عالی ایلن برون والا جاه بلند رتبہ وه حاکم وه سرفراز امیر کہ باج…

Read More..

مدحِ شاه دوم – میرزا اسد الله بیگ غالب

مدحِ شاه ہاں مہِ نو سنیں ہم اس کا نام جس کو تو جھک کے کررہا ہے سلام دو دن آیا ہے تو نظر دمِ…

Read More..