بیانِ مصنّف – میرزا اسد الله بیگ غالب

بیانِ مصنّف گزارشِ غالبؔ منظُور ہے گُزارشِ احوالِ واقعی اپنا بیانِ حُسنِ طبیعت نہیں مجھے سَو پُشت سے ہے پیشۂ آبا سپہ گری کچھ شاعری…

Read More..

سہرے – میرزا اسد الله بیگ غالب

سہرے خوش ہو اَے بخت کہ ہے آج تِرے سر سہرا باندھ شہزاده جواں بخت کے سر پر سہرا کیا ہی اِس چاند سے مُکھڑے…

Read More..

مرثیہ – میرزا اسد الله بیگ غالب

مرثیہ ہاں! اے نفسِ بادِ سحر شعلہ فشاں ہو اے دجلۂ خوں! چشمِ ملائک سے رواں ہو اے زمزمۂ قُم! لبِ عیسیٰ پہ فغاں ہو…

Read More..

سلام – میرزا اسد الله بیگ غالب

سلام سلام اسے کہ اگر بادشہ کہیں اُس کو تو پھر کہیں کچھ اِس سے سوا کہیں اُس کو نہ بادشاه نہ سلطاں یہ کیا…

Read More..

خمسہ – میرزا اسد الله بیگ غالب

خمسہ تضمین بر غزل بہادر شاه ظفر گھستے گھستے پاوں کی زنجیر آدھی ره گئی مر گئے پر قبر کی تعمیر آدھی ره گئی سب…

Read More..

مثنوی – میرزا اسد الله بیگ غالب

مثنوی در صفتِ انبہ ہاں، دلِ درد مندِ زمزمہ ساز کیوں نہ کھولے درِ خزینۂ راز خامے کا صفحے پر رواں ہونا شاخِ گل کا…

Read More..