Mah Rukh Zaidi

مجھکو معصومیت کا صلہ مل گیا – ماه رخ زیدی

مجھکو معصومیت کا صلہ مل گیا – ماه رخ زیدی

مجھکو معصومیت کا صلہ مل گیا وہ جو بچھڑا کوئی دوسرا مل گیا ہے مقدر بھی پتھر کی جیسے لکیر ہم نے چاہا تھا کیا اور کیا مل گیا دل میں مرنے کی خواہش نہیں اب ذرا ہم کو تو جیتے جی ہی خدا مل گیا ہے یہ قدرت کی شانِ عطا دیکھیے جو بھی مانگا تھا اس سے سوا مل گیا سیدھا لے جائیگا ہم کر منزل تلک ایسا آسان سا راستہ ...

محبت کی نہیں جاتی محبت ہو ہی جاتی ہے – ماه رخ زیدی

محبت کی نہیں جاتی محبت ہو ہی جاتی ہے – ماه رخ زیدی

محبت کی نہیں جاتی محبت ہو ہی جاتی ہے دیارِ عشق میں کاٹی لمبی زندگی ہم نے ہزاروں عاشقوں سے دوبہ دو یہ گفتگو کی ہے ہر اک عاشق نے سمجھایا ہمارے تجربے نے ہم کو سکھلایا سمجھ میں بس یہی آیا محبت کی نہیں جاتی محبت ہو ہی جاتی ہے محبت کیا ہے دل کا ذہن سے کچھ گفتگو کرنا کبھی چھونے کو نیلے آسماں کی آرزو کرنا م...

ہم جب بھی تنہا گھر گئے – ماه رخ زیدی

ہم جب بھی تنہا گھر گئے – ماه رخ زیدی

ہم جب بھی تنہا گھر گئے سائے سے اپنے ڈر گئے تیری جدائی سے صنم ہم جیتے جی ہی مر گئے سنتے ہی ذکر کربلا آنکھوں میں آنسو بھر گئے نہ پیار ہم کو مل سکا کاسہ لیے در در گئے راہِ خدا میں مر مٹے پر نام روشن کر گئے سجدے کیے تھے خاک پر اور آسمان تک سر گئے خالی تھا دامن ماہ رخ جب ہم سرِ محشر گئے ماہ رخ زیدی

گلابوں سے مہکی لڑی ہو گئی ہوں – ماه رخ زیدی

گلابوں سے مہکی لڑی ہو گئی ہوں – ماه رخ زیدی

گلابوں سے مہکی لڑی ہو گئی ہوں محبت کی پہلی کڑی ہو گئی ہوں مجھے تو نے ایسی نگاہوں سے دیکھا کہ میں ایک پل میں بڑی ہو گئی ہوں سر شام آنے کا ہے اس کا وعدہ میں صبح سے در پر کھڑی ہو گئی ہوں نہ چھڑوا سکو گے کبھی ہاتھ اپنا محبت بھری ہتھ کڑی ہو گئی ہوں بہت دور ہے مجھ سے خوشیوں کا موسم مسلسل غموں کی جھڑی ہو گ...

دوست ہی کیا سدا رہیں گے ہم – ماه رخ زیدی

دوست ہی کیا سدا رہیں گے ہم – ماه رخ زیدی

دوست ہی کیا سدا رہیں گے ہم بات کچھ تو بڑھائیے صاحب ہو گیا جو لکھا تھا قسمت میں کاہے آنسو بہائیے صاحب پاس آ جائیے خدا کے لیے دل نہیں اب جلائیے صاحب بھوک تو مر گئی ہماری اب کس کی خاطر کمائیے صاحب تھوڑی اشکوں کی کیجیے برسات آگ دل کی بجھائیے صاحب کیوں ہیں خاموش اس قدر آخر کچھ تو ہم کو بتائیے صاحب خوف آت...

مجھ پہ کیوں اسطرح سے ہنستا ہے – ماه رخ زیدی

مجھ پہ کیوں اسطرح سے ہنستا ہے – ماه رخ زیدی

مجھ پہ کیوں اسطرح سے ہنستا ہے دل بڑی مشکلوں سے بستا ہے میرے گائوں کے گھر ہیں سب کچے ارے بادل کہاں برستا ہے جو کبھی لوٹ کر نہیں آئے ان سے ملنے کو دل ترستا ہے عاشقی کا مقام کیا ہو گا جہاں الفت کا بھائو سستا ہے تیرے جانے کے بعد جانے کیوں ہر کوئی شخص مجھ پہ ہنستا ہے میری منزل جسے سمجھ بیٹھے وہ میری خواہ...

ایک دریا تھا اور کنارہ تھا – ماه رخ زیدی

ایک دریا تھا اور کنارہ تھا – ماه رخ زیدی

ایک دریا تھا اور کنارہ تھا میرا گائوں بہت ہی پیارا تھا چھت ٹپکتی تھی بارشوں میں کبھی گھر تھا کچا مگر ہمارا تھا ہاتھ سر پر کسی کا ہونے سے دل کو ڈھارس سی تھی سہارا تھا چھوڑ کر سب وہاں چلے آئے ہمکو دیوانگی نے مارا تھا گھر کی ہر چیز بکھری بکھری تھی میرا دل بھی تو پارا پارا تھا پائوں پکڑے صحن کی مٹی نے ا...

جاگتے جاگتے رات ڈھل جائیگی – ماه رخ زیدی

جاگتے جاگتے رات ڈھل جائیگی – ماه رخ زیدی

جاگتے جاگتے رات ڈھل جائیگی زندگی ایک دن رُخ بدل جائیگی پیار کے چند لمحوں میں کیا خبر تھی بات سوچوں سے آگے نکل جائیگی ہے غریبوں کی بچی نہ گڑیا دیکھی نہ سمجھ ہے بیچاری مچل جائیگی چند دن کو ہے خوابوں کی دنیا جواں برف ہے خود بہ خود ہی پگھل جائیگی میرے ایسے وسیلے ہیں چاہوں اگر موت بھی آنا چاہے تو ٹل جائی...

چمپئی رنگ اور سیاہ آنکھیں – ماه رخ زیدی

چمپئی رنگ اور سیاہ آنکھیں – ماه رخ زیدی

چمپئی رنگ اور سیاہ آنکھیں کر نہ ڈالیں ہمیں تباہ آنکھیں چھوڑ دیں کاروبارِ دنیا پھر ہم کو دے دیں اگر پناہ آنکھیں مل گئیں ہم سے ایک بار اگر جان لیں گی خدا گواہ آنکھیں اک جھلک دیکھنے پہ دل نے کہا کیا بنائیں خدا نے واہ آنکھیں یہ جہاں ہے اندھیر نظروں میں میرا سورج یہ میرا ماہ آنکھیں اس طرف سے نگاہ ہٹتی نہ...