معزول شہنشاہ – علامه اقبال – ارمغان حجاز

معزول شہنشاہ ہو مبارک اس شہنشاہ نکو فرجام کو جس کی قربانی سے اسرار ملوکیت ہیں فاش ‘شاہ’ ہے برطانوی مندر میں اک مٹی کا…

Read More..

خرد کی تنگ دامانی سے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

خرد کی تنگ دامانی سے فریاد خرد کی تنگ دامانی سے فریاد تجلی کی فراوانی سے فریاد گوارا ہے اسے نظارۂ غیر نگہ کی نا…

Read More..

بڈھے بلوچ کی نصیحت بیٹے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

بڈھے بلوچ کی نصیحت بیٹے کو ہو تیرے بیاباں کی ہوا تجھ کو گوارا اس دشت سے بہتر ہے نہ دلی نہ بخارا جس سمت…

Read More..

خرد دیکھے اگر دل کی نگہ – علامه اقبال – ارمغان حجاز

خرد دیکھے اگر دل کی نگہ سے خرد دیکھے اگر دل کی نگہ سے جہاں روشن ہے نور ‘لا الہ’ سے فقط اک گردش شام…

Read More..

موت ہے اک سخت تر جس کا – علامه اقبال – ارمغان حجاز

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام مکر و فن خواجگی کاش…

Read More..

دگرگوں جہاں ان کے زور – علامه اقبال – ارمغان حجاز

دگرگوں جہاں ان کے زور عمل سے دگرگوں جہاں ان کے زور عمل سے بڑے معرکے زندہ قوموں نے مارے منجم کی تقویم فردا ہے…

Read More..

تمام عارف و عامی خودی سے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

تمام عارف و عامی خودی سے بیگانہ تمام عارف و عامی خودی سے بیگانہ کوئی بتائے یہ مسجد ہے یا کہ میخانہ یہ راز ہم…

Read More..

ضمیر مغرب ہے تاجرانہ، – علامه اقبال – ارمغان حجاز

ضمیر مغرب ہے تاجرانہ، ضمیر مشرق ہے راہبانہ ضمیر مغرب ہے تاجرانہ، ضمیر مشرق ہے راہبانہ وہاں دگرگوں ہے لحظہ لحظہ، یہاں بدلتا نہیں زمانہ…

Read More..

مسعود مرحوم – علامه اقبال – ارمغان حجاز

مسعود مرحوم یہ مہر و مہ، یہ ستارے یہ آسمان کبود کسے خبر کہ یہ عالم عدم ہے یا کہ وجود خیال جادہ و منزل…

Read More..

دگرگوں عالم شام و سحر کر – علامه اقبال – ارمغان حجاز

دگرگوں عالم شام و سحر کر دگرگوں عالم شام و سحر کر جہان خشک و تر زیر و زبر کر رہے تیری خدائی داغ سے…

Read More..

تمیز خار و گل سے آشکارا – علامه اقبال – ارمغان حجاز

تمیز خار و گل سے آشکارا تمیز خار و گل سے آشکارا نسیم صبح کی روشن ضمیری حفاظت پھول کی ممکن نہیں ہے اگر کانٹے…

Read More..

فراغت دے اسے کار جہاں سے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

فراغت دے اسے کار جہاں سے فراغت دے اسے کار جہاں سے کہ چھوٹے ہر نفس کے امتحاں سے ہوا پیری سے شیطاں کہنہ اندیش…

Read More..

نشاں یہی ہے زمانے میں – علامه اقبال – ارمغان حجاز

نشاں یہی ہے زمانے میں زندہ قوموں کا نشاں یہی ہے زمانے میں زندہ قوموں کا کہ صبح و شام بدلتی ہیں ان کی تقدیریں…

Read More..

دراج کی پرواز میں ہے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

دراج کی پرواز میں ہے شوکت شاہیں دراج کی پرواز میں ہے شوکت شاہیں حیرت میں ہے صیاد، یہ شاہیں ہے کہ دراج! ہر قوم…

Read More..

نکل کر خانقاہوں سے ادا – علامه اقبال – ارمغان حجاز

نکل کر خانقاہوں سے ادا کر رسم شبیری نکل کر خانقاہوں سے ادا کر رسم شبیری کہ فقر خانقاہی ہے فقط اندوہ و دلگیری ترے…

Read More..

کھلا جب چمن میں کتب خانۂ – علامه اقبال – ارمغان حجاز

کھلا جب چمن میں کتب خانۂ گل کھلا جب چمن میں کتب خانۂ گل نہ کام آیا ملا کو علم کتابی متانت شکن تھی ہوائے…

Read More..

آج وہ کشمیر ہے محکوم و – علامه اقبال – ارمغان حجاز

آج وہ کشمیر ہے محکوم و مجبور و فقیر آج وہ کشمیر ہے محکوم و مجبور و فقیر کل جسے اہل نظر کہتے تھے ایران…

Read More..

خود آگاہی نے سکھلا دی ہے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

خود آگاہی نے سکھلا دی ہے جس کو تن فراموشی خود آگاہی نے سکھلا دی ہے جس کو تن فراموشی حرام آئی ہے اس مرد…

Read More..

حاجت نہیں اے خطہ گل شرح – علامه اقبال – ارمغان حجاز

حاجت نہیں اے خطہ گل شرح و بیاں کی حاجت نہیں اے خطہ گل شرح و بیاں کی تصویر ہمارے دل پر خوں کی ہے…

Read More..

غریبی میں ہوں محسود – علامه اقبال – ارمغان حجاز

غریبی میں ہوں محسود امیری غریبی میں ہوں محسود امیری کہ غیرت مند ہے میری فقیری حذر اس فقر و درویشی سے، جس نے مسلماں…

Read More..

آزاد کی رگ سخت ہے مانند – علامه اقبال – ارمغان حجاز

آزاد کی رگ سخت ہے مانند رگ سنگ آزاد کی رگ سخت ہے مانند رگ سنگ محکوم کی رگ نرم ہے مانند رگ تاک محکوم…

Read More..

سر اکبر حیدری، صدر اعظم – علامه اقبال – ارمغان حجاز

سر اکبر حیدری، صدر اعظم حیدر آباد دکن کے نام تھا یہ اللہ کا فرماں کہ شکوہ پرویز دو قلندر کو کہ ہیں اس میں…

Read More..

حدیث بندۂ مومن دل آویز – علامه اقبال – ارمغان حجاز

حدیث بندۂ مومن دل آویز حدیث بندۂ مومن دل آویز جگر پر خوں، نفس روشن، نگہ تیز میسر ہو کسے دیدار اس کا کہ ہے…

Read More..

کہن ہنگامہ ہائے آرزو سرد – علامه اقبال – ارمغان حجاز

کہن ہنگامہ ہائے آرزو سرد کہن ہنگامہ ہائے آرزو سرد کہ ہے مرد مسلماں کا لہو سرد بتوں کو میری لادینی مبارک کہ ہے آج…

Read More..

ابلیس کی مجلس شوری – علامه اقبال – ارمغان حجاز

ابلیس کی مجلس شوری ابلیس یہ عناصر کا پرانا کھیل، یہ دنیائے دوں ساکنان عرش اعظم کی تمناؤں کا خوں! اس کی بربادی پہ آج…

Read More..

سمجھا لہو کی بوند اگر تو – علامه اقبال – ارمغان حجاز

سمجھا لہو کی بوند اگر تو اسے تو خیر سمجھا لہو کی بوند اگر تو اسے تو خیر دل آدمی کا ہے فقط اک جذبہء…

Read More..

ترے دریا میں طوفاں کیوں – علامه اقبال – ارمغان حجاز

ترے دریا میں طوفاں کیوں نہیں ہے ترے دریا میں طوفاں کیوں نہیں ہے خودی تیری مسلماں کیوں نہیں ہے عبث ہے شکوۂ تقدیر یزداں…

Read More..

کبھی دریا سے مثل موج – علامه اقبال – ارمغان حجاز

کبھی دریا سے مثل موج ابھر کر کبھی دریا سے مثل موج ابھر کر کبھی دریا کے سینے میں اتر کر کبھی دریا کے ساحل…

Read More..

آواز غیب – علامه اقبال – ارمغان حجاز

آواز غیب آتی ہے دم صبح صدا عرش بریں سے کھویا گیا کس طرح ترا جوہر ادراک! کس طرح ہوا کند ترا نشتر تحقیق ہوتے…

Read More..

رندوں کو بھی معلوم ہیں – علامه اقبال – ارمغان حجاز

رندوں کو بھی معلوم ہیں صوفی کے کمالات رندوں کو بھی معلوم ہیں صوفی کے کمالات ہر چند کہ مشہور نہیں ان کے کرامات خود…

Read More..

حسین احمد – علامه اقبال – ارمغان حجاز

حسین احمد عجم ہنوز نداند رموز دیں، ورنہ ز دیوبند حسین احمد! ایں چہ بوالعجبی است سرود بر سر منبر کہ ملت از وطن است…

Read More..

کہا اقبال نے شیخ حرم سے – علامه اقبال – ارمغان حجاز

کہا اقبال نے شیخ حرم سے کہا اقبال نے شیخ حرم سے تہ محراب مسجد سو گیا کون ندا مسجد کی دیواروں سے آئی فرنگی…

Read More..

نہ کر ذکر فراق و آشنائی – علامه اقبال – ارمغان حجاز

نہ کر ذکر فراق و آشنائی نہ کر ذکر فراق و آشنائی کہ اصل زندگی ہے خود نمائی نہ دریا کا زیاں ہے، نے گہر…

Read More..

عالم برزخ – علامه اقبال – ارمغان حجاز

عالم برزخ مردہ اپنی قبر سے کیا شے ہے، کس امروز کا فردا ہے قیامت اے میرے شبستاں کہن! کیا ہے قیامت؟ قبر اے مردۂ…

Read More..

حضرت انسان – علامه اقبال – ارمغان حجاز

حضرت انسان جہاں میں دانش و بینش کی ہے کس درجہ ارزانی کوئی شے چھپ نہیں سکتی کہ یہ عالم ہے نورانی کوئی دیکھے تو…

Read More..

مری شاخ امل کا ہے ثمر – علامه اقبال – ارمغان حجاز

مری شاخ امل کا ہے ثمر کیا مری شاخ امل کا ہے ثمر کیا تری تقدیر کی مجھ کو خبر کیا کلی گل کی ہے…

Read More..

پانی ترے چشموں کا تڑپتا – علامه اقبال – ارمغان حجاز

پانی ترے چشموں کا تڑپتا ہوا سیماب پانی ترے چشموں کا تڑپتا ہوا سیماب مرغان سحر تیری فضاؤں میں ہیں بیتاب اے وادی لولاب گر…

Read More..

دوزخی کی مناجات – علامه اقبال – ارمغان حجاز

دوزخی کی مناجات اس دیر کہن میں ہیں غرض مند پجاری رنجیدہ بتوں سے ہوں تو کرتے ہیں خدا یاد پوجا بھی ہے بے سود،…

Read More..

چہ کافرانہ قمار حیات می – علامه اقبال – ارمغان حجاز

چہ کافرانہ قمار حیات می بازی چہ کافرانہ قمار حیات می بازی کہ با زمانہ بسازی بخود نمی سازی دگر بمدرسہ ہائے حرم نمی بینم…

Read More..

گرم ہو جاتا ہے جب محکوم – علامه اقبال – ارمغان حجاز

گرم ہو جاتا ہے جب محکوم قوموں کا لہو گرم ہو جاتا ہے جب محکوم قوموں کا لہو تھرتھراتا ہے جہان چار سوے و رنگ…

Read More..

آں عزم بلند آور آں سوز – علامه اقبال – ارمغان حجاز

آں عزم بلند آور آں سوز جگر آور آں عزم بلند آور آں سوز جگر آور شمشیر پدر خواہی بازوے پدر آور Hits: 11

Read More..

غریب شہر ہوں میں، سن تو – علامه اقبال – ارمغان حجاز

غریب شہر ہوں میں، سن تو لے مری فریاد غریب شہر ہوں میں، سن تو لے مری فریاد کہ تیرے سینے میں بھی ہوں قیامتیں…

Read More..

تصویر و مصور – علامه اقبال – ارمغان حجاز

تصویر و مصور تصویر کہا تصویر نے تصویر گر سے نمائش ہے مری تیرے ہنر سے ولیکن کس قدر نا منصفی ہے کہ تو پوشیدہ…

Read More..