نفرت کے تاجروں کو – افتخار راغب

غزل نفرت کے تاجروں کو محبت کی آرزو دوزخ کے باسیوں کو ہے جنت کی آرزو حکمت کی آرزو ہے نہ حیرت کی آرزو اہلِ…

Read More..

آگ سینے میں حسد – افتخار راغب

غزل آگ سینے میں حسد کی پل رہی ہے یا نہیں آپ کو شہرت ہماری کھل رہی ہے یا نہیں آپسی رنجش ہی دِل کو…

Read More..

تجھے کیا پتا تجھے – افتخار راغب

غزل تجھے کیا پتا تجھے کیا خبر مِرے بے خبر تجھے چاہتا ہوں میں کس قدر مِرے بے خبر مِرے دل کی دیکھنا تشنگی مِری…

Read More..

چشمِ حیرت کی تڑپ – افتخار راغب

غزل چشمِ حیرت کی تڑپ دُور کریں خود کو اب اور نہ مستور کریں فرطِ جذبات میں کیا کہہ بیٹھوں لب کشائی پہ نہ مجبور…

Read More..

روٹھ جائے گی نظر – افتخار راغب

غزل روٹھ جائے گی نظر آنکھوں سے مت بہا خونِ جگر آنکھوں سے مول آنکھوں کا کوئی کیا دے گا ہیچ ہیں لعل و گہر…

Read More..

کہاں تک صبر کی – افتخار راغب

غزل کہاں تک صبر کی تلقین بادل دعائے آب پر آمین بادل جھلس جائیں گے پر ہونے نہ دیں گے ہم اپنی پیاس کی توہین…

Read More..

مست مگن ہیں خود – افتخار راغب

غزل مست مگن ہیں خود کو بے پروا کر کے خود جلتے ہیں دھوپ میں ہم سایہ کر کے صحرائے جاں لالہ زار نہ ہو…

Read More..

وفا کے پتلے بھی – افتخار راغب

غزل وفا کے پتلے بھی چاہت کی مورتیں بھی ہیں دلِ حزیں میں کئی اور صورتیں بھی ہیں ستم تو ڈھایا ہے مہنگائی نے بھی…

Read More..

آ محبت سے آ سکون – افتخار راغب

غزل آ محبت سے آ سکون سے رہ دل ہے مسکن ترا سکون سے رہ تجھ کو ملتا ہے گر سکونِ دل دل ہمارا دُکھا…

Read More..

بیان کرنے کی طاقت – افتخار راغب

غزل بیان کرنے کی طاقت نہیں ہنر بھی نہیں نہیں طویل یہ قصّہ تو مختصر بھی نہیں ہمارے ہاتھوں وہ ہم کو تباہ کرتے ہیں…

Read More..

توڑ کے دل کو کیا – افتخار راغب

غزل توڑ کے دل کو کیا ملتا ہے سچ بولو دل کو تم نے سمجھا کیا ہے سچ بولو تم کیا جانو وصل کی لذّت…

Read More..

دِکھا کر ہمارا ہی – افتخار راغب

غزل دِکھا کر ہمارا ہی سایا ہمیں ہماری نظر نے ڈرایا ہمیں نہ آنکھوں میں تم نے بسایا ہمیں نہ اشکوں کی صورت بہایا ہمیں…

Read More..

سچ کبھی ہوگا – افتخار راغب

غزل سچ کبھی ہوگا تمھارا خواب کیا مان جائے گا دلِ بے تاب کیا کیا بتاؤں کر کے میری غیبتیں نوش فرماتے ہیں کچھ احباب…

Read More..

کیا عشق ہے جب ہو – افتخار راغب

غزل کیا عشق ہے جب ہو جائے گا، تب بات سمجھ میں آئے گی جب ذہن کو دل سمجھائے گا، تب بات سمجھ میں آئے…

Read More..

میرے دل کو بھی – افتخار راغب

غزل میرے دل کو بھی تیرے جی کو بھی چین اِک پل نہیں کسی کو بھی جی رہا ہوں تِرے بغیر بھی میں اور ترستا…

Read More..

یاد دلاؤ مت ان کو – افتخار راغب

غزل یاد دلاؤ مت ان کو وہ رات اور دن چین انھیں اب آجاتا ہے میرے بِن مچھلی کیسے رہتی ہے پانی کے بِن حال…

Read More..

اچھّے دنوں کی آس – افتخار راغب

غزل اچھّے دنوں کی آس لگا کر میں نے خود کو روکا ہے کیسے کیسے خواب دِکھا کر میں نے خود کو روکا ہے میں…

Read More..

بہ صد خلوص، بہ صد – افتخار راغب

غزل بہ صد خلوص، بہ صد احترام یاد آئے یہ کون ہے جو مجھے صبح و شام یاد آئے وہی ہیں ہم جنھیں سجدہ کیا…

Read More..

جسم سے جاں کی ہے – افتخار راغب

غزل جسم سے جاں کی ہے منظور جدائی مجھ کو گردشِ وقت نہ دے اور صفائی مجھ کو ایک تو شیریں دہن اُس پہ یہ…

Read More..

دنیا ہے ہم سے بر – افتخار راغب

غزل دنیا ہے ہم سے بر سرِ پیکار اِک طرف ہم اپنے حال سے بھی ہیں بیزار اِک طرف قصرِ انا میں وہ کہیں محصور…

Read More..

کس جگہ کس وقت اور – افتخار راغب

غزل کس جگہ کس وقت اور کس بات پر کتنا چپ رہنا ہے اُن کو علم ہے میری شرحِ خواہش و جذبات پر کتنا چپ…

Read More..

لڑتے لڑتے غموں کے – افتخار راغب

غزل لڑتے لڑتے غموں کے لشکر سے سخت جاں ہو گیا ہوں اندر سے ہجر کی سرد رُت سے واقف تھے ڈھک لیا دل کو…

Read More..

نہ دل کشی کی – افتخار راغب

غزل نہ دل کشی کی تمنّا نہ دل بری درکار غزل درخت کو ہر دم ہے تازگی درکار دِکھائے اُن کا وہ چہرہ جو ہے…

Read More..

اگرچہ میری طبیعت – افتخار راغب

غزل اگرچہ میری طبیعت بھی کوئی سخت نہیں ذرا سی چوٹ سے دل میرا لخت لخت نہیں ملو گے تم کبھی اب اتّفاق سے بھی…

Read More..

اِک بڑی جنگ لڑ رہا – افتخار راغب

غزل اِک بڑی جنگ لڑ رہا ہوں میں ہنس کے تجھ سے بچھڑ رہا ہوں میں جیسے تم نے تو کچھ کیا ہی نہیں سارے…

Read More..

تحمّل کوچ کر جائے – افتخار راغب

غزل تحمّل کوچ کر جائے تمھیں کیا فرق پڑتا ہے تڑپ کر کوئی مر جائے تمھیں کیا فرق پڑتا ہے تمھیں کیا فرق پڑتا ہے…

Read More..

حال کہنا تھا دل کا – افتخار راغب

غزل حال کہنا تھا دل کا بر موقع وقت نے کب دیا مگر موقع تم بہت سوچنے کے عادی ہو تم گنْواتے رہو گے ہر…

Read More..

روٹھنا مت کہ منانا – افتخار راغب

غزل روٹھنا مت کہ منانا نہیں آتا مجھ کو پیار آتا ہے جتانا نہیں آتا مجھ کو آسماں سر پر اُٹھانا نہیں آتا مجھ کو…

Read More..

کہاں ہوں ، کون ہوں – افتخار راغب

غزل کہاں ہوں ، کون ہوں ، کیسا ہوں ، کس شمار میں ہوں غبارِ وقت ہوں ، الفت کی رہ گزار میں ہوں عجیب…

Read More..

مِری تقدیر ہی – افتخار راغب

غزل مِری تقدیر ہی اچھّی نہیں تھی تِری شمشیر ہی اچھّی نہیں تھی میں ہر دم قید رہنا چاہتا تھا تِری زنجیر ہی اچھّی نہیں…

Read More..

وہ حد سے زیادہ – افتخار راغب

غزل وہ حد سے زیادہ گریزاں ہے مجھ سے جسے چاہتا ہوں میں حد سے زیادہ وہیں پر ہے جمہوریت کار آمد جہاں نیک رہتے…

Read More..

ابتدا مجھ سے انتہا – افتخار راغب

غزل ابتدا مجھ سے انتہا مجھ پر ختم ہو تیری ہر جفا مجھ پر کام آتی ہے تجربہ کاری ظلم کرتا ہے تجربہ مجھ پر…

Read More..

اے مرے دل تجھے – افتخار راغب

غزل اے مرے دل تجھے پتا کیا ہے عشق سے بڑھ کے سانحہ کیا ہے جانتا ہوں کہ حل نہیں کوئی کیا بتاؤں کہ مسئلہ…

Read More..

جلاؤ شوق سے تم – افتخار راغب

غزل جلاؤ شوق سے تم علم و آگہی کے چراغ نہ بجھنے پائیں مگر امن و آشتی کے چراغ تمام قوّتِ باطل کی متّحد پھونکیں…

Read More..

دلِ بیتاب کی نقلِ – افتخار راغب

غزل دلِ بیتاب کی نقلِ مکانی یاد آتی ہے مِری معصوم چاہت کی کہانی یاد آتی ہے جہانِ جسم و جاں کی شادمانی یاد آتی…

Read More..

سنا تھا میں نے – افتخار راغب

غزل سنا تھا میں نے پیسہ بولتا ہے تِری محفل میں دیکھا بولتا ہے عبث واعظ تِری شعلہ بیانی کہ بولیں لوگ اچھّا بولتا ہے…

Read More..

کیا سمجھتی ہے رات – افتخار راغب

غزل کیا سمجھتی ہے رات سورج کو کیا بتائیں یہ بات سورج کو اتنی گرمی ہے دیکھیے کس میں کون دیتا ہے مات سورج کو…

Read More..

میں سب کچھ بھول – افتخار راغب

غزل میں سب کچھ بھول جانا چاہتا ہوں میں پھر اسکول جانا چاہتا ہوں ترے شہرِ محبّت کی گلی میں میں بن کر دھول جانا…

Read More..

یاسمن یا گلاب سا – افتخار راغب

غزل یاسمن یا گلاب سا کچھ ہے میری آنکھوں میں خواب سا کچھ ہے ہر گھڑی اضطراب سا کچھ ہے ہجر ہے یا عذاب سا…

Read More..

ازل سے زیست پہ – افتخار راغب

غزل ازل سے زیست پہ میری قضا کا پہرا ہے میں وہ چراغ ہوں جس پر ہوا کا پہرا ہے تمام پہروں پہ پہرا خدا…

Read More..

بہت ہے نور ذکرِ – افتخار راغب

غزل بہت ہے نور ذکرِ رفتگاں میں کہاں وہ روشنی ہم سے جہاں میں کسی کا ذکر کر دیتا ہے اکثر چراغاں قریۂ دردِ نہاں…

Read More..

چشمِ غیرت کا ہے – افتخار راغب

غزل چشمِ غیرت کا ہے اثاثہ کیا ابر سے چاہتا ہے دریا کیا ہر ملاقات آخری سمجھو سانس کی ڈور کا بھروسا کیا کیوں گریزاں…

Read More..

دلوںسے بغض و کدورت – افتخار راغب

غزل دلوںسے بغض و کدورت کی گرد چھٹ جائے فضا میں بکھری عداوت کی گرد چھٹ جائے خلوص و انس و محبّت کے نرم جھونکے…

Read More..

کس درجہ ہے باکمال – افتخار راغب

غزل کس درجہ ہے باکمال چہرہ کہہ دیتا ہے دل کا حال چہرہ ہے مشکل بہت ہی مسکرانا ہو غم سے اگر نڈھال چہرہ بے…

Read More..

لَے ملاؤ نہ اُن کی – افتخار راغب

غزل لَے ملاؤ نہ اُن کی لَے کے ساتھ سُر بدلتے ہیں جو سَمے کے ساتھ ہم مسائل میں ڈوب جاتے ہیں روز سورج تِرے…

Read More..

ہر گھڑی ہنسنا – افتخار راغب

غزل ہر گھڑی ہنسنا ہنسانا یاد ہے وہ حسیں دلکش زمانا یاد ہے جانے کب بجلی گری کچھ یاد نیٔں بن چکا تھا آشیانا یاد…

Read More..

نمی سے آنکھوں کی – افتخار راغب

غزل نمی سے آنکھوں کی سرسبز اپنا حال تو کر شکستہ حال اُمیدوں کی دیکھ بھال تو کر تڑپ رہے ہوں کہیں تجھ سے بھی…

Read More..

اِک چہرہ نایاب – افتخار راغب

غزل اِک چہرہ نایاب دِکھائی دیتا ہے خوابوں میں بھی خواب دِکھائی دیتا ہے کون ہے وہ جس کی خاطر یہ پاگل دِل ہر لمحہ…

Read More..

تِرا مشورہ ہے بجا – افتخار راغب

غزل تِرا مشورہ ہے بجا مگر میں رکھوں گا اپنا خیال کیا مِرا دل کسی پہ ہے آگیا مِرا حال ہوگا بحال کیا کوئی تیٖر…

Read More..

چھانو کی دل کو – افتخار راغب

غزل چھانو کی دل کو حسرت کہاں سب کی دیوار پر چھت کہاں حسن کی ہو نوازش نصیب عشق کی ایسی قسمت کہاں سیلِ جذبات…

Read More..

زمیں ہے نوحہ کناں – افتخار راغب

غزل زمیں ہے نوحہ کناں امن و آشتی کے لیے پہ مشتِ خاک بضد اور کج روی کے لیے دل و دماغ بھی، آب و…

Read More..

کہاں تھا اتنا محبت – افتخار راغب

غزل کہاں تھا اتنا محبت کا نور آنکھوں میں کسی نے دیکھ لیا ہے حضور آنکھوں میں یقیں نہیں تو ذرا جھانک کر کبھی دیکھو…

Read More..

مِری وفاؤں پہ جس – افتخار راغب

غزل مِری وفاؤں پہ جس کی وفا کا پہرا ہے دیارِ دل پہ اُسی خوش ادا کا پہرا ہے یہ اُس نے زُلف بکھیری ہے…

Read More..

ہو جائے اس کا ایک – افتخار راغب

غزل ہو جائے اس کا ایک اشارا زمین پر جنّت کا رو نما ہو نظارا زمین پر آلودگیِ ذہن و خیالات کے سبب دشوار ہو…

Read More..

اب ہے مشکل سنبھال – افتخار راغب

غزل اب ہے مشکل سنبھال کر رکھنا مت کہو دل سنبھال کر رکھنا مجھ کو آنکھوں سے قتل ہونا ہے چشمِ قاتل سنبھال کر رکھنا…

Read More..

بچھڑکے تجھ سے ہو – افتخار راغب

غزل بچھڑکے تجھ سے ہو محسوس کیسے تنہائی قدم قدم پہ تِری یاد کی ہے رعنائی جہاں کہیں بھی رہوں تجھ کو دیکھ لیتا ہوں…

Read More..

توجّہ میں تری – افتخار راغب

غزل توجّہ میں تری تبدیلیاں معلوم ہوتی ہیں مجھے گھٹتی ہوئی اب دوریاں معلوم ہوتی ہیں درختوں پر کچھ ایسا آندھیوں نے قہر ڈھایا ہے…

Read More..

درمیاں غیر کی – افتخار راغب

غزل درمیاں غیر کی شرارت ہے چین آئے تو کس طرح آئے مجھ کو شکوہ انھیں شکایت ہے چین آئے تو کس طرح آئے اپنی…

Read More..

سکونِ قلب کا اب – افتخار راغب

غزل سکونِ قلب کا اب اختتام ہے شاید کسی کی چشمِ عنایت کا کام ہے شاید حیات بخش ہے تیری نگاہِ لطف و کرم قضا…

Read More..

کیسی تپش اب دل میں – افتخار راغب

غزل کیسی تپش اب دل میں ہے مت پوچھیے کیوں دل مرا مشکل میں ہے مت پوچھیے مت پوچھیے اُس شوخ کے لطف و کرم…

Read More..