اس قدر مسلسل تھیں شدتیں جدائی کی – احمد فراز

اس قدر مسلسل تھیں شدتیں جدائی کی آج پہلی بار اس سے میں نے بے وفائی کی ورنہ اب تلک یوں تھا خواہشوں کی بارش…

Read More..

انکار نہ اقرار بڑی دیر سے چپ ہیں – احمد فراز

انکار نہ اقرار بڑی دیر سے چپ ہیں کیا بات ہے سرکار بڑی دیر سے چپ ہیں آسان نہ کر دی ہو کہیں موت نے…

Read More..

سنا ہے لوگ اسے آنکھ بھر کے دیکھتے ہیں – احمد فراز

سنا ہے لوگ اسے آنکھ بھر کے دیکھتے ہیں تو اس کے شہر میں کچھ دن ٹھہر کے دیکھتے ہیں سنا ہے ربط ہے اس…

Read More..

دکھ فسانہ نہیں کہ تجھ سے کہیں – احمد فراز

دکھ فسانہ نہیں کہ تجھ سے کہیں دل بھی مانا نہیں کہ تجھ سے کہیں آج تک اپنی بے کلی کا سبب خود بھی جانا…

Read More..

تجھ پر بھی نہ ہو گمان میرا – احمد فراز

تجھ پر بھی نہ ہو گمان میرا اتنا بھی کہا نہ مان میرا میں دکھتے ہوئے دلوں کا عیسیٰ اور جسم لہو لہان میرا کچھ…

Read More..

سلسلے توڑ گیا وہ سبھی جاتے جاتے – احمد فراز

سلسلے توڑ گیا وہ سبھی جاتے جاتے ورنہ اتنے تو مراسم تھے کہ آتے جاتے شکوہ ظلمتِ شب سے تو کہیں بہتر تھا اپنے حصے…

Read More..

کب تک درد کے تحفے بانٹو خونِ جگر سوغات کرو – احمد فراز

کب تک درد کے تحفے بانٹو خونِ جگر سوغات کرو ”جالب ہن گل مک گئی اے” ھن جان نوں ہی خیرات کرو کیسے کیسے دشمنِ…

Read More..

اس سے پہلے کہ بے وفا ہو جائیں – احمد فراز

اس سے پہلے کہ بے وفا ہو جائیں کیوں نہ اے دوست ہم جدا ہو جائیں تو بھی ہیرے سے بن گیا پتھر ہم بھی…

Read More..

ابھی کچھ اور کرشمے غزل کے دیکھتے ہیں – احمد فراز

ابھی کچھ اور کرشمے غزل کے دیکھتے ہیں فراز اب ذرا لہجہ بدل کے دیکھتے ہیں جدائیاں تو مقدر ہیں پھر بھی جانِ سفر کچھ…

Read More..

اب کے تجدید وفا کا نہیں امکاں جاناں – احمد فراز

اب کے تجدید وفا کا نہیں امکاں جاناں یاد کیا تجھ کو دلائیں ترا پیماں جاناں یونہی موسم کی ادا دیکھ کے یاد آیا ہے…

Read More..