جب بھی تم چاہو مجھے زخم – زین شکیل

جب بھی تم چاہو مجھے زخم نیا دیتے رہو
بعد میں پھر مجھے، سہنے کی دعا دیتے رہو
ٹھیک سے سوچ سمجھ کر مجھے رخصت کرنا
یہ نہ ہو بعد میں رو رو کے صدا دیتے رہو
ٹھیک ہے مان لیا ہے کہ خطا تھی میری
جیسے تم چاہو، میں حاضر ہوں، سزا دیتے رہو
چھوڑ جاؤ گے تو رو دھو کے سنبھل جاؤں گا
پاس رہ کر مجھے غم حد سے سوا دیتے رہو
روٹھ کر وہ جو تمہیں خود ہی منا لیتا ہے
زینؔ تم اس کو دعا سب سے جُدا دیتے رہو
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.