عشق یاد رکھتا ہےراستہ – زین شکیل

عشق یاد رکھتا ہے
راستہ اذیت کا
بات کرنے والوں کی
بات ہی نرالی ہے
درد سہتے رہنے میں
مصلحت تو ہوتی ہے
بے رُخی برتنے سے
اس کا جی نہیں بھرتا
ہم کسی کی باتوں کو
سرسری نہیں لیتے
خامشی کی منزل پر
لوگ چپ نہیں رہتے
آپ خامشی اپنی
توڑ کیوں نہیں دیتے
خواب نیند کا رستہ
بھول بھی تو جاتے ہی
آپ کی نگاہوں کے
رنگ کتنے پیارے ہی
آپ مان بھی جائیں
آپ بس ہمارے ہیں
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.