دھواں – سید شکیل عارض

دھواں
تجھے کھو کے مجھ کو یوں لگتا ہے
میری عمر گزرے گی رائگاں
نہ تصورِ رہِ موت و غم
نہ خیالِ منزلِ جاوداں
کہ تو جیسے بجھتا چراغ ہے
کہ میں جیسے اٹھتا دھواں فقط
سید شکیل عارض
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.