درد دل میں سمو لیا – زین شکیل

درد دل میں سمو لیا جائے
آج تھوڑا سا رو لیا جائے
ہاتھ آیا تو میں نے یہ سوچا
اُس کا دامن بھگو لیا جائے
ہم تو بس اس خیال سے روئے
کیوں نہ آنکھوں کو دھو لیا جائے
کل ستاروں سے بات کر لیں گے
آج کی رات سو لیا جائے
تجھ کو آخر سمیٹ رکھنا ہے
کیوں نہ خود میں پِرو لیا جائے
اجنبی لگ رہی ہیں یہ خوشیاں
اب کسی غم کا ہو لیا جائے
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.