تھم نہ جاؤ بارشو!جی – زین شکیل

تھم نہ جاؤ بارشو!
جی جلاؤ بارشو!
سنگ یادِ یار کے
لوٹ آؤ بارشو!
ہر دفعہ رونا ہی کیا
مسکراؤ بارشو!
ابر میری آنکھ کے
دیکھ جاؤ بارشو!
اُس کو تم سے پیار تھا
مت بھلاؤ بارشو!
رِم جھمے سُر چھیڑ دو
گیت گاؤ بارشو!
پیاس ہے بس پیاس ہے
آؤ جاؤ بارشو!
کس لیے ناراض ہو؟
مان جاؤ بارشو!
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.