اکثر دل کا حال سنا کر – زین شکیل

اکثر دل کا حال سنا کر روئے ہیں
اکثر کوئی بات چھپا کر روئے ہیں
ایسے رونا کون گنے گا بولو ناں
ہنسنے جیسی شکل بنا کر روئے ہیں
ہنستے چہرے دیکھ کے ہم نے جانا ہے
ہم ہی تیرے شہر میں آکر روئے ہیں
اب جو نا منظور ہے کم رونا سو ہم
دریا اپنی آنکھ میں لاکر روئے ہیں
ہر اک دکھ پر آج ہی ماتم کرنا تھا
ساری خوشیاں پاس بلا کر روئے ہیں
پہلے رو رو اشک بہائے پھر روئے
دیکھو ہم ترتیب لگا کر روئے ہیں
ایسے کیسے زین بھلا ہم رو دیتے
سب کو اب کی بار ہنسا کر روئے ہیں
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.