اس میں ہر بات ہی عذاب – زین شکیل

اس میں ہر بات ہی عذاب سی تھی
ایک ہی دوست تھا، کمال کا تھا
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.