اسی موسم میں رہنا – زین شکیل

اسی موسم میں رہنا ہے
تمہارے غم میں رہنا ہے
جنھیں تم یاد رکھتے ہو
اُنہی کم کم رہنا ہے
تمہاری آنکھ میں ہے جو
ہمیں اُس نَم میں رہنا ہے
تمہارے نام کا کانٹا
ہمارے دم میں رہنا ہے
چلی جا آسماں زادی
تجھے کیوں ہم میں رہنا ہے
زین شکیل
Share:

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.